پاک بھارت کشیدگی میں مزید اضافہ

لاہور: پاک بھارت سفارتی تعلقات میں ایک بار پھر کشیدگی بڑھنے لگی۔

بھارت نے نئی دہلی میں پاکستانی ہائی کمیشن کے عملے کی تعداد کو نصف کرنے کا حکم نامہ جاری کر دیا، جس کے بعد  پاکستان نے بھی اسلام آباد میں موجود بھارتی ہائی کمیشن کے عملے کو آدھا کرنے کا فیصلہ کیا۔

خبر رساں ادارے کے مطابق بھارت میں موجود  پاکستانی ہائی کمیشن کے ارکان کو نئی دہلی میں ہراساں کیا گیا۔ جبکہ سفارت خانے کا گھیراؤ بھی کیا  ۔

دریں اثناء اس معاملے پر دفتر خارجہ نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر گوریو اہلووالیا کو دفتر خارجہ طلب کر کے شدید احتجاج کیا اور جواب میں پاکستان نے بھی بھارتی ناظم الامور کو ہائی کمشن کے اسٹاف میں 50 فیصد کمی کے احکامات جاری کردیے۔

پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا اس فیصلے پر کہنا تھا کہ پاکستان بھارت کے الزامات مسترد کرتا ہے ، ہمیں اپنی ذمہ داریوں کا علم ہے۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان ویانا کنوینشن کی پاسداری کرتا ہے۔

واضح رہے کہ بھارت نے پاکستانی ہائی کمیشن عملے میں 50 فیصد کمی کے بہانے پر الزامات لگائے تھے۔

اس سے قبل 2019 میں بھارت کی مقبوضہ اور جموں کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے پر دونوں ممالک نے اپنے سفیر واپس بلا لیے تھے۔

دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

عائشہ ظہیر

متعلقہ پوسٹ

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔