سوشل میڈیا صارفین نے زرتاج گل کے کوویڈ19 پوائنٹس پر میمز بنادیئے

زرتاج گل کو کوویڈ19 کی تعریف کرنا مہنگا پڑ گیا

وفاقی وزیر برائے موسمیات زرتاج گل کو کورونا کی نئی تعریف پیش کرنا مہنگا پڑ گیا۔ جس کے بعد سے سوشل میڈیا پر میمز کی لائن لگ گئی۔

یہ بھی پڑھیں: وزیر مملکت زرتاج گل کا عوام کو جواب

حال ہی میں زرتاج گل نے پاکستان ٹیلی ویژن کے ایک پروگرام میں انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ کووڈ 19 کا مطلب اس کے 19 پوائنٹس ہیں۔ شو کے بعد ان کی اس بات کا ویڈیو کلپ وائرل ہوا۔ جس پر متعدد صارفین نے دلچسپ میمز بنا کر سوشل میڈیا پر خوب تمسخر اڑایا۔

علی احمد نامی صارف نے زرتاج گل کا مزاق اڑاتے ہوئے لکھا کہ اس ڈپریشن والے حالات میں ہمیں اس طرح کے لطیفوں کی بڑی ضرورت تھی۔

صارف علی احمد نے اپنے اس ٹویٹ میں مزید کہا کہ زرتاج گل کے مطابق گاڑیوں سے ڈینٹ نکالنے والے کو ڈینٹسٹ کہتے ہیں، ڈرم بجانے والے کو ڈرماٹالوجسٹ وغیرہ۔

نوریمہ خانم نامی صارف نے اس بات پہ میم شیئر کی کہ یعنی ٹی 20 میں 20 کھلاڑی کھیلتے ہیں تبھی اسے ٹی 20 کہتے ہیں۔

وقاص نامی صارف نے زرتاج گل کی اس بات پر میم شیئر کی کہ رونالڈو کو CR7 اس لیے کہتے ہیں کیونکہ وہ اپنی کلاس میں سات بار CR بنا تھا۔

اسی طرح دیگر صارفین نے بھی ہیش ٹیگ زرتاج گل اور ہیش ٹیگ زرتاج گل لاجک کو استعمال کرتے ہوئے خوب میمز شیئر کیں۔

اس بات سے لطف اندوز ہوتے ہوئے گلوکار علی گل پیر نے بھی ایک مزاحیہ ویڈیو شیئر کی جس میں انہوں نے زرتاج گل کے کووڈ 19 پوائنٹس کی تشریح کی ہے۔

علی گل پیر کی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ انہوں نے ڈاکٹر کا لیب کوٹ پہنا ہے۔ جب کہ اس ویڈیو میں وائس اوور زرتاج گل کے انٹرویو کی شامل کی گئی ہے۔

علی گل پیر کی یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہورہی ہے۔ جبکہ دوسری جانب زرتاج گل نے تمسخر اڑانے پر برہمی کا اظہار اپنے ایک ٹوئیٹ کے ذریعے کیاہے۔

انہوں نے لکھا ہے کہ روزانہ ٹی وی پر گھنٹوں بات کرتی ہوں۔ پرچی کے بغیر، کہنا چاہتی تھی کہ وباء کا اثر، شدت مختلف ممالک میں مختلف ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ چند لمحوں کی خطا پر یوں ماتم کناں ہونے کی بجائے اپنی جماعتوں کے حشر نشر پر توجہ دیں تو شاید ان کے حق میں بہتر ہو۔ تنقید سے نہیں گھبراتی اور مضبوط ہوتی ہوں۔

دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

حرا اسحاق

حرا اسحاق نے حال ہی میں کراچی یونیورسٹی سے ماسٹرز کی ڈگری مکمل کی ہے۔ صحافت کے شعبے سے پچھلے پانچ سال سے وابستہ ہیں، طالبِ علمی کے زمانے سے ہی کالمز، آرٹیکلز اور مضامین لکھتی رہی ہیں۔ رائنٹنگ کے علاوہ رپورٹنگ کے فرائض بھی انجام دے چکی ہے۔ مختلف ٹی وی چینلز اور ویب سائٹس کے لیئے کام کرتی رہی ہے۔ ایک صحافی اور بلاگر کی حیثیت سے معاشرتی مسائل پر گہری نِگاہ رکھتی ہے۔

متعلقہ پوسٹ

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔